کم عمر نظر آنے کے لئے زبردست ٹپس اور فیشل ایکسر سائز۔۔۔

0
1304
loading...
});

بڑھتی ہوئی عمر کے اثرات اور اس کی علامات کو چھپانے کے لئے بے شمار پروڈکٹس مارکیٹ میں دستیاب ہیں۔ اب ٹیکنالوجی اتنی ترقی کر چکی ہے کہ فلرز سے لے کر بوٹاکس انجکشنزتک موجود ہیں جو آپ کی جوانی برقراررکھنے میں مدد تو کرتے ہیں لیکن وقتی طور پر اورپھر بعد میں سائیڈ ایفیکٹ کی وجہ سے جلد پہلے سے زیادہ خراب کرتے ہیں، لیکن ہمارا دھیان بہت سے سادہ اور آسان نسخوں کی طرف کیوں نہیں جاتا جن پر عمل کر کے آپ گردش ایام کو پیچھے کی جانب لوٹنے پر مجبور کر سکتے ہیں اور تا دیر جوان نظر آسکتے ہیں۔ مگر اس سے پہلے میں آپ کو چند ایک ٹپس بتاؤ ں گی جن کے کرنے سے آپ کا چہرہ ہمیشہ پررونق اور کھلا ہوا دکھائی دے گا۔
مسکراہٹ کا فائدہ
آپ کی مسکراہٹ ہر شے کو جگمگا سکتی ہے تو پھر آپ کی شخصیت پر تو اس کے اثرات سب سے پہلے نظر آتے ہیں، سو مسکراتے رہیں!ایک تحقیق کے مطابق مسکراہٹ کسی بھی فرد کو اس کی عمر سے کئی سال کم کردیتی ہے۔ یہ محض کہنے کی بات نہیں بلکہ اس کی سائنسی توجیہات ہیں جن پر آپ بھی ایک نظر ڈال سکتی ہیں ۔ سب سے پہلے یہ کہ مسکراہٹ کی بدولت آپ کی قوت مدافعت میں اضافہ ہوجاتا ہے کیونکہ مسکراہٹ کے نتیجے میں انڈورفرنز (Endorfirns ) پیدا ہوتے ہیں جو کہ قدرتی طور سے درد کا احساس زائل کرنے والے ہارمونز ہیں۔ یہ قدرتی اصول ہے کہ ہمارے جسم میں جس قدر انڈوفرنز پیدا ہوں گے، ہمارے جسم میں اسی قدربیماریوں سے لڑنے کی طاقت پیدا ہو گی۔ مسکرانے کے نتیجے میں ہمارے اندر خوشی کا احساس جنم لیتا ہے ، کیونکہ مسکرانے سے سیروٹونن نامی ہارمونز کا اخراج ہوتا ہے جو قدرتی طور پر پریشانی کا احساس ختم کرتے ہیں اور ہمارے دل میں خوشی کا احساس جگاتے ہیں ۔ اس میں بھی کوئی شبہ نہیں کہ آپ کی ایک مسکان آپ کو ایک دم جوان کر دیتی ہے۔
اچھی خوراک کا اہم کردار
اچھی اور متوازن غذا آپ کو تا دیر جوان رکھنے میں اہم کردار ادا کرتی ہے۔ اپنی غذا میں اچھی چکنائی کو ضرور شامل رکھیں۔ جیسے کہ مچھلی، اخروٹ اور دیگر پھلوں میں پائے جانے والے اومیگاتھری فیٹی ایسڈ نا صرف آپ کا موڈ خوشگوار رکھتے ہیں بلکہ ہڈیوں کو مضبوط رکھنے کے ساتھ ساتھ جلد پر بڑھتی ہوئی عمر کے اثرات کو بھی مٹاتے ہیں ۔ اس کے علاوہ ٹماٹر کھائیں ، کیونکہ ان میں موجود کیمیکلز جلد کی حفاظت کرتے ہیں۔
سڑیس سے آزادی
ایک تحقیق کے مطابق سٹریس اورذہنی تناؤ جسم میں ایسی تبدیلیاں پیدا کرتا ہے ، جس سے بڑھاپے کے اثرات تیزی سے نمودار ہونے لگتے ہیں۔ اس کے علاوہ ذہنی پریشانیوں کے سبب بلڈ پریشر اور دل کی دھڑکن میں بھی اضافہ ہوتا ہے، لہذا اگر جوان اور خوبصورت نظر آناچاہتی ہیں تو پر سکون رہیں اور اپنی خوشیوں کا خیال رکھیں۔
یہ تو تھیں چند ٹپس اب چہرے کی جوانی کو برقرار رکھنے کے لئے ایک زبردست فیشل ایکسر سائز کرنے کا طریقہ بتانے جا رہی ہوں ۔ جس کو کرنے سے چہرے کی جلد کبھی بھی نہیں مرجھائے گی۔ یہاں آپ کے لیے زبردست قسم کی تین فیشل ایکسر سائزز پیش ہیں۔ بیس منٹ کی جانے والی یہ ورزشیں آپ کے لئے فیس لفٹ کا سا کام دکھائیں گی۔
* اپنے ہاتھوں کی دونوں درمیانی انگلیاں اپنی بھنوؤں کے درمیان رکھیں۔پھر انگلیوں کے پوروں کی مددسے آنکھوں کے بیرونی گوشوں پر دباؤڈالیں۔ اب اوپر کی جانب دیکھتے ہوئے پپوٹو ں کو اوپر کی جانب حرکت دیں۔ اس کے بعد ذرا وقفہ دیں اور چھ بار اس ورزش کو دہرائیں ۔ آخر میں جب ایسا کریں تو اپنی آنکھوں کو دس سیکنڈز کے لئے بند کرلیں۔ اس سے آنکھوں کی سوجن دور ہوگی اور ان کے اردگرد بننے والی جھریوں میں کمی واقع ہوگی۔
* دہانے کے گرد بننے والی لائنیں ختم کرنے ، رخساروں اور جبڑے کو جھریوں سے دور رکھنے کے لئے اپنے دانتوں کو ہونٹوں میں دبائیں اور منہ کو O کی شکل میں گول کر لیں ۔ اس کے بعد جتنا ہو سکے مسکرائیں، لیکن مسکراتے ہوئے دانتوں کو چھپائے رکھیں۔ اس ورزش کو چھ بار دہرائیں ۔ تیسری بار مسکراتے ہوئے دونوں ہاتھوں کی شہادت کی انگلی کو ٹھوڑی پر رکھیں ، جبڑے کو اوپر نیچے حرکت دیں اور سر کو پیچھے کی جانب جھکائیں ۔ اس ورزش کو دو بار دہرائیں۔
* گردن کی خوبصورتی قائم رکھنے کے لئے سامنے کی جانب دیکھیں اور انگلیوں کی پوروں کوچہرے کی طرف والے حصے پرگردن کے اوپری حصے پر رکھتے ہوئے جلد کو نیچے کی طرف کھینچیں۔ اس دوران سر کو پیچھے کی طرف جھکاتے جائیں ، اسے دوبارہ دہرائیں ۔ اس کے بعد نچلے ہونٹ کو جس قدر باہر نکال سکتی ہیں نکالیں ۔ کالر بون پر انگلیاں رکھ کر ٹھوڑی کو اوپر کی طرف اٹھائیں ۔ اب دہانے کے دونوں گوشوں کو نیچے کی طرف جھکائیں، وقفہ دیں اور گہری سانسیں لیں۔ ان آپ کا فیشل ورک آؤٹ مکمل ہوا۔
اس فیس ایکسر سائز کو روزانہ کریں ۔ صرف ایک ہفتہ کرنے سے ہی آپ کے چہرے کی جوانی واپس آجائے گی اور آپ کے چہرے سے ہر طرح کی جھریاں اور جھائیاں مکمل طور پر ختم ہو جائے گی۔

SHARE
loading...
gmca

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here